6

آٹے کا بحران شدت اختیار کرگیا،قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں

ملک بھر میں آٹے کا بحران شدت اختیار کرگیا، دس کلو آٹے کی قیمت آسمان سے بات کرنے لگی، غریب شہری کیلئے بچوں کو پیٹ بھر کے کھانا کھلانا مشکل ہوگیا –
اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ شہر قائد میں آٹا ایک سو تیس روپے فی کلو فروخت ہونے سے شہریوں کی چیخیں نکل گئیں شہریوں کا کہنا ہے کہ موجودہ حکومت نے آٹے کی قیمت بَلند ترین سطح پر پہنچا کر دو وقت کی روٹی کا حصول بھی مشکل بنا دیا ملک میں حالیہ بارشوں اور سیلاب سے مشکلات بڑھنے لگیں تو دوسری جانب گندم کے بحران نے بھی شہریوں کئے ہوش اڑا دیئے۔
اوپن مارکیٹ میں گندم کی قیمت بڑھی تو چکی مالکان نے بھی آٹے کی قیمتوں میں اضافہ کردیا ملک میں آٹے کی قیمت 130روپے کلو تک پہنچ گئی۔ کراچی میں آٹا ملک میں سب سے مہنگا ہے،م ایک کلو کی قیمت125سے130 روپے تک پہنچ چکی ہے –
ذرائع کا کہنا ہے کہ لاہور میں110 روپے سے 116 روپے میں ایک کلو آٹا مل رہا ہے۔ اسلام آباد میں چکی کا آٹا125 روپے میں فروخت ہونے لگا کوئٹہ میں آٹے کی قیمت120روپے کلو ہوگئی۔ گوجرانوالہ میں چکی کا آٹا 130 روپے کلو فروخت ہو رہا ہے چکی مالکان کا کہنا ہے کہ غلہ منڈیوں میں قلت کے سبب فی من گندم 2 ہزار850 سے بڑھ کر3 ہزار800 روپے تک پہنچ چکی ہے۔
بجلی کے بھاری بل بھی ادا کر رہے ہیں۔ آٹا مہنگا کرنا ناگزیر ہو چکا ہے پیاز ٹماٹر فاسٹ ٹریک پر منگوانے کا فیصلہ،ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کارروائی کی ہدایات وپن مارکیٹ میں بیس کلو آٹے کی قیمت میں بھی اضافہ ہوچکا ہے۔
لاہور میں حکومت کی جانب سے فراہم کردہ بیس کلو آٹے کے تھیلے کی قیمت نو سو اسی روپے ہے جو مارکیٹ میں کئی جگہوں پر دستیاب ہی نہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں