6

بھارت: پارٹ ٹائم جاب کرنا آئی ٹی کمپنی کے ملازمین کو مہنگا پڑ گیا

پارٹ ٹائم جاب کرنا بھارتی آئی ٹی کمپنی کے ملازمین کا جرم بن گیا، بیک وقت 3 سو ملازمین کو نوکری سے فارغ کر دیا گیا۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق معروف آئی ٹی کمپنی کے چیئرمین نے بیک وقت 300 ملازمین کو دھوکا دینے کا الزام لگا کر نوکری سے فارغ کردیا۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق آئی ٹی کمپنی کے چیئرمین کا کہنا ہے کہ نوکری سے فارغ کیے گئے تمام ملازمین حریف کمپنی میں پارٹ ٹائم جاب کرتے تھے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پارٹ ٹائم جاب کے حوالے سے اپنے حالیہ بیان پر قائم ہیں کہ یہ کمپنی کی سالمیت کی مکمل خلاف ورزی ہے۔

واضح رہے کہ یہ پہلا موقع نہیں ہے جب بھارت میں پارٹ ٹائم جاب کرنے والوں کو نشانہ بنایا گیا ہے بلکہ اس سے قبل بھارت کی دوسری سب سے بڑی آئی ٹی کمپنی نے بھی پارٹ ٹائم جاب پر باقاعدہ پابندی عائد کر رکھی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں