37

بینک آ ف پنجاب (BOP)کے پاکستان کارپوریٹ ریسٹرکچرنگ کمپنی لمیٹڈ (PCRCL)کے ساتھ MOU پر دستخط

لاہور(ٹیوٹرپاکستان) بینکنگ انڈسٹری کے نان پرفارمنگ ایسٹس پچھلے کئی سالوں سے مستقل طور پر ایک بڑھتا ہوا رجحان ہیں یہ امر بڑی تشویش کا باعث ہے اور معاشی ترقی کی راہ میں ایک بڑی رکاوٹ بھی ہے۔توقع کی جا رہی ہے کہ ان NPAsمیں موجودہ خراب معاشی حالات، سیاسی طور پر غیر یقینی صورتحال اور COVID-19کے اثرات کی وجہ سے مزید اضافہ ہو گا۔
لہذا، ملک کی حالیہ معاشی صورتحال کو دیکھتے ہوئے، اس بات کی ضرورت ہے کہ ان NPAsکوفعال بنانے کیلئے تیز ی سے غیر معمولی اقدامات کئے جائیں اور متاثرہ کمپنیز کو معاشی اور عملی طور پر فعال کیا جائے۔
دی بینک آ ف پنجاب نے CRCایکٹ کے تحت قائم ہونے والی پاکستان کارپوریٹ ریسٹرکچرنگ کمپنی لمیٹڈ(PCRCL)کی غیر روایتی ریمیڈیل مینیجمنٹ کی مہار ت استعمال کرتے ہوئے اس موقع سے فائدہ اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے۔
اس تناظر میں، بینک نے اپنے نان۔ پرفارمنگ ایسٹس کا مکمل حساب لگا کر، تباہ ہوتی صنعت کی بحالی میں اپنا کردار ادا کرنے کیلئے اور اپنے لمبے عرصے سے پھنسے ہوئے نان پرفارمنگ ایسٹس (NPAs)کو متحرک کرنے کیلئے PCRCLکے ساتھ میمورنڈم آف انڈرسٹینڈنگ پر دستخط کئے ہیں۔
اس MoUپر لاہور میں بی او پی کے ہیڈ آ فس میں جناب ارسلان، ایم اقبال (چیف رسک آ فیسر۔بی اوپی) اور جناب عمران بٹ (چیف فنانشنل آ فیسر۔پی سی آر سی ایل) نے دستخط کئے۔ دستخط کی اس تقریب میں جناب ظفر مسعود (ِصدر۔ بی او پی) اور جناب لاکا سرور (سی ای او) نے شرکت کی۔
یہ MoUبینک کو انڈسٹری میں PCRCLکی سروسز سے فائدہ اٹھانے والا پہلا بینک بنا دے گا۔ PCRCLکے ساتھ یہ شراکت بینک کے لئے مسرت کا باعث ہے کیونکہ بی اوپی کو یقین ہے کہ یہ درست سمت میں اٹھایا جانے والا قدم ہے جس سے نہ صرف وہ اپنے نان۔پرفارمنگ پورٹ فولیو کو فعال کرنے میں کامیاب ہوگا بلکہ خراب حالات کا شکار کاروبار بھی بحالی کی جانب بڑھے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں