13

تیسرا ٹی ٹوئنٹی: پاکستان نے جنوبی افریقہ کو ہرا کر سیریز 1-2 سے جیت لی

پاکستان نے جنوبی افریقہ کو تیسرے ٹی ٹوئنٹی میچ میں 4 وکٹوں سے شکست دے کر سیریز 1-2 سے اپنے نام کرلی۔

قذافی اسٹیڈیم لاہور میں کھیلے جارہے اس میچ میں پاکستانی کپتان بابر اعظم نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔

قومی ٹیم کے کپتان کا یہ فیصلہ ابتدا میں بہترین ثابت ہوا جہاں قومی بولرز بالخصوص ڈیبیو کرنے والے زاہد محمود نے شاندار بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے مہمان ٹیم کی کمر توڑ دی تھی۔

پاکستانی بولرز نے 48 کے مجموعے تک جنوبی افریقہ کے 6 جبکہ 65 پر ساتواں کھلاڑی بھی آؤٹ کردیا۔
ایسے میں دوسرے اینڈ پر موجود جارح مزاج بلے باز ڈیوڈ ملر نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے ٹیل اینڈرز کے ساتھ مل کر ٹیم کا ٹوٹل 164 رنز تک پہنچا دیا۔

ملر نے 45 گیندوں پر 5 چوکوں اور 7 چھکوں کی مدد سے 85 رنز کی ناقابلِ شکست اننگز کھیلی، انھوں نے فہیم اشرف کے آخری اوور میں 25 رنز بٹورے۔پاکستان کی جانب سے ڈیبیو کرنے والے زاہد محمد نے 3 جبکہ عثمان قادر اور محمد نواز کے حصے میں 2، 2 وکٹیں آئیں۔

ہدف کے تعاقب نے قومی بلے بازوں نے شاندار کھیل کا مظاہرہ کیا اور حیدر علی اور محمد رضوان نے پہلی وکٹ کے لیے 51 رنز بنائے۔

جنوبی افریقہ بولر تبریز شمسی نے بہترین گیند بازی کا مظاہرہ جاری رکھا اور پاکستانی بیٹسمین کو نہ صرف کھل کر کھیلنے سے روکا بلکہ ہر اوور میں وکٹیں بھی لیتے رہے۔

پہلے محمد رضوان نے 42 اور پھر کپتان بابر اعظم نے 44 رنز کی اننگز کھیل کر ٹیم کو سہارا دیا، تاہم وکٹیں گرنے کے باعث جنوبی افریقہ کا دباؤ بڑھتا گیا۔ ایسے میں پہلے فہیم اشرف نے باؤنڈری لگا کر اور پھر محمد نواز نے گیند کو باؤنڈری پار پھینک کر پریشر کو کم کیا۔

میچ کے اختتام لمحات میں حسن علی نے اعصاب پر قابو رکھتے ہوئے ٹیم کو میچ اور سیریز میں کامیابی دلوادی۔

جنوبی افریقہ کی جانب سے تبریز شمسی نے شاندار بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 4 وکٹیں حاصل کیں جبکہ ڈیوین پریٹوریئس اور بورن فورٹین نے ایک ایک وکٹ لی۔

میچ میں دو وکٹیں لینے اور اختتامی لمحات میں 18 رنز بنانے پر محمد نواز کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا، جبکہ محمد رضوان کو سیریز کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں