18

جامع مسجد وزیر خان لاہور کےمنیجراشفاق نے لاہور ہائی کورٹ کے فصیلے کی دھجیاں اڑا دی،جوتیوں کی اجرت وصولی کا ٹھیکہ اپنوں میں بانٹ دیا-

لاہور(خبر نگار )محکمہ اوقاف کے زیر اہتام جامع مسجد وزیر خان میں زونل نمبر ۶کے منیجر اشفاق نے سیلف کولیکشن کا ٹھیکہ بھی جامع مسجد وزیر خا ن کے دو ماہ قبل ختم ہونے والے پاپوش کے سابق ٹھیکیدار سے مک مکا کرکے جوتیوں کی اجرت وصول کرنے کا جوتیوں کا ٹھیکہ اسے دے دیا تا کہ مل کر قومی خزانے کو سیف کولیکشن کے نام لوٹاجائے بتایا گیاہے کہ سابق چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کے حکم پر تمام مزارات پرجوتیوں اور باتھ روموں کے ٹھیکے ختم کردیئے گئے تھے محکمے اوقاف نے اس خلاف اعلی عدلیہ سے رجوع کیا تھا جس نے سابق چیف جسٹس کے احکامات کو ختم کر دیا جس کے بعد محکمے نے عارضی طور پر مزارات پر جوتیوں اور باتھ روموں کی اجرت وصول کرنے کےلیے سیلف کولیکشن کر نے کا فصیلہ کیا لیکن زونل نمبر ۶ کے مینجر اشفاق نے اس فصیلے کی دھجیاں اڑاتے ہوئے سابق ٹھیکیدار سے ملی بھگت کرکے نہ صرف جوتیوںکا ٹھیکہ دیا ہے بلکہ ٹھیکیدار اور اس کے ملازم اقبال کو ۲ ہجرے بھی الاٹ کر دیے ہیں اقبال کے بارے میں اہل علاقہ ابھی تک لاعلم ہیں کہ یہ کون ہے اور کہاں سے آیا ہے اب جبکہ سیلف کو لیکشن کے تحت جوتیوں اور باتھ روموںکی اجرت وصول کے کا فصیلہ ہو چکا ہے منیجر اشفاق نے اوقاف کے ملازمین کی بجائے اپنے چہتے سابق ٹھیکیدار کو یہ ذمہ داری سونپ دی ہے اس حوالے سے جب جامع مسجد کے ملازمین سے پوچھا گیا تو انہوں نے جواب دیا کہ سابق ٹھیکیدار کا ٹھیکہ ۲ ما قبل ختم ہو گیا تھا منیجرنے اس سے ہجرے خالی کروانے کی بجائے ہماری اسے سیلف کولیکشن کی ذمہ داری دے دی ہے تا ملر اپنی جیبیں زیادہ اور محکمے میں کم آمدن جمع کرائی جائے جامع مسجد میں قبضہ گروپ کے حوالے سے منیجر کا کہنا ہے کہ وہ محلے دار ہیں میںانہیںکیسے جامع مسجد کے برآمدے میں بیھٹنے اور محفل لگانے سے روک سکتا ہوں اہل علاقہ نے صوبائی وزیر پیر سید سعید الحسن شاہ سیکرٹیری نبیل جاوید اور ڈاٹریکٹر جنرل مذہبی امور ڈاکٹر رضا بخاری کا جامع مسجد وزیر خان کی کمیٹی پر پابندی لگا نے پر خصوصی شکریہ ادا کرتے اپیل کی ہے کہ وہ جلد جلد قبضہ گروپ اور اس کے سرغنہ منیجر اشفاق کو بھی اللہ کے گھر سے فارغ کرکے اہل علاقہ سے دعاہیں اور اپنی عزتوں میں اضافہ کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں