20

خیبر پختونخواٹیکنالوجی بورڈاور ڈیمو کی جانب سے خواتین انٹرپرنئیرزکیلئے پہلی خصوصی ٹریننگ ورکشاپ کا آغاز

(ٹیوٹرپاکستان)  خیبر پختونخوا انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ(KPITB)  اور ڈیمو (Demo) نے درشلز، خیبر پختونخوا میں SheMeansBusiness ٹریننگ ورکشاپ کا آغا ز کردیا ہے۔ یہ سہ روزہ ڈیجیٹل مارکیٹنگ اینڈفنانشل منیجمنٹ ورکشاپ درشل پشاور میں منعقد کی گئی۔
 
2016میں شروع ہونے والے فیس بک کے SheMeansBusiness پروگرام نے ہنرمندی کی ٹریننگ اور کاروبار کی تحریک کے ذریعے خواتین انٹرپرینئرزکو ڈیجیٹل اکنامی میں شامل کرنے کیلئے تعاون کیا۔ عالمی تحقیق نے اس حقیقت کو اجاگر کیا ہے کہ کسی بھی ملک کی معاشی ترقی کے فروغ دینے میں خواتین انٹر پرینئرز فعال کردار ادا کرتی ہے۔ اس مشن کو آگے بڑھانے کیلئے DEMO نے  KPITBکے  اشتراک سے درشلز کمیونٹی کی سات جگہوں پر سہ روزہ کیپسٹی بلڈنگ ٹریننگ ورکشاپس کی سیریز کا اہتمام کیا۔ درشلز، خیبرپختونخوا میں کمیونٹی کے مخصوص جگہیں ہیں، جن کا مقصدنوجوانوں کواشتراک، جدت، ٹریننگ تک رسائی اور نئے کاروبارکے آغاز کیلئے مواقع فراہم کرنا ہے۔
 
 ٹریننگ پروگرام میں میزبانی اور تفریح سے لے کرہیلتھ کیئر اور تعلیم تک مختلف صنعتوں سے تعلق رکھنے والی خواتین انٹرپرینئرز نے شرکت کی۔ ان کو پریزنٹیشنز اور عملی مظاہروں کے ذریعے سوشل میڈیا کے ذرائع کے استعمال، مواد کی تخلیق، آن لائن مارکیٹنگ اور فنانشل منیجمنٹ سے متعلق ہنر اور صلاحیتوں کے بارے میں تربیت فراہم کی گئی۔
 
ڈیمو کے سی ای او،محمد بن مسعود نے ورکشاپ میں خطاب کرتے ہوئے کہا،” مجھے اپنے شرکاء کی دلچسپی اور جذبے کو دیکھ کر بہت خوشی ہورہی ہے۔SheMeansBusinessپروگرام سے کے۔ پی۔ کے  کی خواتین کو عالمی معیار کے نصاب سے سیکھنے اور ڈیجیٹل اور فنانشل علم کے حصول سے اپنے کاروبار کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔مجھے یقین ہے کہ ڈیجیٹل ہنرمندی آج کی اور مستقبل کی ضرورت ہے اور خواتین انٹرپرنئیرز کے باصلاحیت گروہ کو علم کی فراہمی میں اپنا کردار ادا کرنے میں خوشی محسو س کررہا ہوں۔میں بہت پرجوش ہوں اور مجھے توقع ہے  بقیہ درشلز میں ہونے والی آئندہ ورکشاپس میں زیادہ پذیرائی حاصل ہوگی۔”
 
اس موقع پر (کے پی آئی ٹی بی)کے منیجنگ ڈائریکٹر، ڈاکٹر صاحبزادہ علی محمود نے اپنی تقریر میں کہا،” اس پروگرام کا آغازان انٹرپرنیئرزکیلئے بہت خوشی کا موقع ہے جو کاروباری افراد، خصوصاََ خواتین، ڈیجیٹل دور میں کا میابی کے حصول کیلئے مطلوبہ صلاحیتوں کے حصول کے خواہشمند ہیں۔ اس ٹریننگ کی پذیرائی دیکھ کر میں بہت پر امید ہوں کہ اس قدم سے کے پی کے کی خواتین انٹرپرینئرز میں ڈیجیٹل ہنرکو فروغ دینے میں مدد ملے گی جس سے ہماری معیشت میں نمایاں تبدیلی آئے گی۔”
 
اگلی ور کشاپ آنے والے مہینوں میں ایبٹ آباد، سوات، صوابی، بنوں اور مردان کے درشلز میں منعقد کی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں