16

دہشت گردی کی اطلاعات تھیں، بچے اور مدرسے سافٹ ٹارگٹ تھے: شوکت یوسفزئی

خیبر پختونخوا کے وزیر برائے ثقافت شوکت یوسفزئی نے پشاور کے علاقے دیر کالونی میں کوہاٹ روڈ پر واقع مدرسے میں دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کی اطلاعات تھیں، بچے اور مدرسے سافٹ ٹارگٹ تھے۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کو مذہب سے تعلق نہیں، علاقے میں کافی عرصے سے امن تھا، سیکورٹی بھی بہتر تھی۔

صوبائی وزیر نے کہا کہ بچے اور مدرسے سافٹ ٹارگٹ تھے، دہشت گردی کی اطلاعات تھیں، کوئٹہ اور پشاور میں دہشت گردی تھریٹ الرٹ تھا۔

انہوں نے کہا کہ تھریٹ الرٹ کے بعد سیکورٹی مزید سخت کردی گئی تھی، دہشت گردوں نے بزدلانہ کارروائی کی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں