19

رانا ثناء کا مہنگائی کنٹرول نہ کرنے کا اعتراف

وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ کا کہنا ہے کہ جب پی ٹی آئی حکومت میں تھی تو مہنگائی ہو رہی تھی، کوئی شک نہیں کہ مہنگائی کو کنٹرول نہیں کیا جا سکا۔
اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے رانا ثناء اللہ نے کہا کہ عمران خان نے جاتے جاتے قیمتیں کم کر کے آئی ایم ایف معاہدے کی خلاف ورزی کی، اگر مشکل فیصلے نہ کرتے اور سیاست بچاتے تو پاکستان کو ناقابل تلافی نقصان ہوتا۔
انہوں نے کہا کہ ہم نے ذاتی سیاست کا نہیں ملک اور قوم کا سوچا، ہم نے ریاست کے لیے مشکل فیصلے کیے، مشکل فیصلوں کی وجہ سے مہنگائی ہوئی، مقبولیت کا دعویٰ کرنے والے بتائیں انہوں نے ساڑھے چار سالوں میں کیا کیا؟
رانا ثناء اللہ کا کہنا ہے کہ وزیرِ اعظم نے سیلاب کے بعد دنیا کے ساتھ کامیاب ڈائیلاگ کیا ہے، سیلاب کی تباہی کے ہم قصوروار نہیں، عمران خان کی پالیسیاں ملک دشمن تھیں، ان کے بیانیے کی کوئی حیثیت نہیں، وہ کہتے ہیں 25 مئی کی تیاری نہیں تھی۔
وفاقی وزیر نے کہا کہ اگر عمران کی 25 مئی کی تیاری نہیں تھی تو کس طرح 20 لاکھ لوگ لانے کا دعویٰ کیا تھا، پی ٹی آئی چیئرمین سمجھتے ہیں کہ اس کی حکومت ہے تو ٹھیک ورنہ ملک پر ایٹم بم گر جائے، ایک گروہ چڑھائی کرنے کا کہہ رہا ہے اس کا کیا جواب دیں، کیا ان کے سامنے لیٹ جائیں؟
ان کا کہنا ہے کہ اگر پی ٹی آئی مسلح جتھے لے کر آئی تو روکیں گے، مسلح جتھوں کو روکنے کے لیے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو بروئے کار لانا پڑے گا، عمران خان مسلح جتھوں کو لے کر آیا تو اسی انداز میں نمٹا جائے گا، یہ جتھہ ریاست پر چڑھ دوڑنے کے لیے آیا تو اس کو روکیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں