19

صدر مملکت کے بطور چانسلر اختیارات کم کرنے کا فیصلہ

وفاقی حکومت نے وفاقی جامعات کے ایکٹ میں ترمیم کا فیصلہ کرلیا ہے جس کے تحت صدر مملکت کے بطور چانسلر اختیارات کم ہوجائیں اور اور جامعات میں وائس چانسلرز کی تعیناتی سے لے کر تمام اہم اختیارات وزیر اعظم کو منتقل ہوجائیں گے –
قومی نصاب کونسل کی تقریب میں گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر تعلیم رانا تنویر نے کہا کہ جامعہ اردو سمیت تمام وفاقی جامعات میں ترمیم کی جائے گی کیونکہ ان جامعات کے ایکٹ پیچیدہ ہیں جس سے مسائل پیدا ہورہے ہیں وفاقی اردو یونیورسٹی میں مستقل وائس چانسلر لگانا مسلۂ بنا ہوا ہے۔
آئی بی سی سی کا ایکٹ تیار ہوچکا ہے اور اسے جلد اسمبلی میں پیش کردیا جائے گا اس کے علاوہ سیکریٹری آئی بی سی سی غلام علی ملاح کی اچھی کارکردگی کے پیش نظر ان کی مدت ملازمت میں توسیع کی جارہی ہے، بعض اداروں کے سربراہوں کی تنخواہیں 25 سے 60 لاکھ تنخواہیں لے رہے ہیں جبکہ وہ کرتے کچھ نہیں اور اداروں پر بوجھ بنے ہوئے ہیں-
ان کے سیکریٹریز کی تنخواہیں تین سے چار لاکھ ہوتی اور کام سارا وہ کرتے ہیں چناچہ سربراہوں اور سیکریٹریز کی تنخواہوں پر نظر ثانی کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں