26

عابد ملہی نے موٹر وے پر واردات کا اعتراف کرلیا

موٹروے پر پیش آنے والے زیادتی کے واقعے کے مرکزی ملزم عابد ملہی نے موٹروے پر کی گئی واردات کا اعتراف کر لیا ہے۔

موٹروے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد علی کا اعترافی بیان میں کہنا ہے کہ ہے کہ 9 ستمبر کو دوست بالا مستری نے مجھے کرول بلایا تھا، میں اور شفقت کرول گاؤں سے دریا کی طرف جا رہے تھے، موٹر وے پر کھڑی گاڑی دیکھ کر اس کے پاس گئے، گاڑی کا شیشہ توڑا اور خاتون کو نیچے اتارا ۔
عابد ملہی نے کہا ہے کہ خاتون سے 20 ہزار لوٹے اور موٹروے پر ہی سائیڈ پر لے آئے، بچے گاڑی کے اندر تھے پھر خاتون سے شفقت اور میں نے زیادتی کی، ہم 20 منٹ وہاں رہے پھر پولیس کے آنے پر فرار ہوگئے۔
ملزم عابد ملہی کا بتانا ہے کہ زیاتی کے بعد خاتون گاڑی کے پاس چلی گئی، واردات کے بعد میں اپنے گھر شیخوپورہ چلا گیا اور شفقت کہیں اور چلا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں