22

غزہ: اسرائیل کے فلسطینیوں پر حملے جاری، شہداء کی تعداد 200 ہو گئی

ظالم اسرائیل کی جانب سے غزہ میں فلسطینیوں پر لرزہ خیز مظالم جاری ہیں، بمباری کے نتیجے میں 200 شہید ہوگئے، شہدا میں 59 بچے بھی شامل ہیں۔

غزہ میں انسانیت کی چیخیں مغربی ممالک کے ضمیر کو نہ جگا سکیں، اسرائیلی بمباری دوسرے ہفتے میں داخل ہو گئی، صہیونی بمباری میں ایک ہی خاندان کی چاروں نسلیں ختم ہوگئیں۔ نوے سالہ دادا، دادی سمیت شیر خوار بھی ابدی نیند سو گئے۔

اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں فلسطینی جوان اپنی والدہ کے ساتھ ملبے تلے دب گیا۔ ماں کی آخری سانسیں چل رہی ہیں،، بیٹا رو رو کر ہمت بندھا رہا ہے۔

اسرائیل کی وحشیانہ بمباری جاری ہے، دس منٹ میں 60 حملے کئے، دو ماہر ڈاکٹروں کو بھی شہید کردیا گیا۔

اسرائیلی حملے میں مزاحمتی تنظیم اسلامی جہاد کے اہم کمانڈر ہسام ابو ہربید بھی شہید ہوگئے جسکے بعد جہاد اسلامی نے اسرائیل پر متعدد میزائل برسائے، حماس کی جانب سے بھی جوابی کارروائیوں کا سلسلہ جاری ہے۔

امریکی وزیر خارجہ نے ایک بار پھر اسرائیلی بربریت کو کلین چٹ دیتے ہوئے کہا کہ اسرائیل اپنے دفاع کا حق رکھتا ہے۔ اینٹونی بلنکن نے حماس اور مزاحمتی تنظیموں سے اسرائیل پر حملے بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

جوبائیڈن کے ہاتھ خون سے رنگے، فلسطین کی حمایت سے پیچھے نہیں ہٹ سکتے:اردوان

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں