27

مارچ میں ملٹی نیشنل کمپنیوں نے 30 ملین ڈالر کا سرمایہ نکال لیا

مارچ کے مہینے میں ملٹی نیشنل کمپنیوں نے جزوی طور پر اپنا سرمایہ نکال لیا بالخصوص ٹیلی کوم سیکٹر سے سرمایہ نکالا گیا۔
الفا بیٹا کور کے سی او او خرم شہزاد نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ان کے علاوہ بیشتر ملٹی نیشنل کمپنیوں نے سیاسی عدم استحکام کی وجہ سے سرمایہ کاری کے فیصلوں پر عمل درآمد روک رکھا تھا۔
اسٹیٹ بینک کے اعدادوشمار کے مطابق غیرملکیوں نے مارچ میں غیرملکی سرمایہ کاری ( ایف ڈی آئی ) کی مد میں 30 ملین ڈالر کا سرمایہ نکال لیا، جب کہ گذشتہ برس مارچ میں 173.4 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری آئی تھی۔ مارچ میں صرف ٹیلی کمیونی کیشن سیکٹر سے 173.5 ملین ڈالر کا انخلا ہوا۔
سرمائے کے اس انخلا کا اثر سوئٹزرلینڈ، یو اے اے اور امریکا سے آنے والی معمول کی سرمایہ کاری نے کسی حد تک زائل کیا۔ مجموعی طور پر رواں مالی سال کے ابتدائی 9ماہ کے دوران غیرملکی سرمایہ کاری 2 فیصد کم ہوکر 1.28 ارب ڈالر رہی۔
خرم شہزاد کے مطابق سرمائے کا انخلا ( 30ملین ڈالر ) کاروبار کا حصہ ہے۔ بیرونی سرمایہ کاری سیاسی استحکام کے بعد پھر سرمایہ لانے شروع کردیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ رواں مالی سال میں غیرملکی سرمایہ کاری کا حجم 1.5 سے 1.6 ارب ڈالر تک ہوسکتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں