21

کام کی رفتار کو تیز اور منصوبوں کی بروقت تکمیل کے لیے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائیں-سی ای او جناب عمران امین

کام کی رفتار کو تیز اور منصوبوں کی بروقت تکمیل کے لیے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائیں-سی ای او جناب عمران امین
سی ای او پی سی بی ڈی ڈی اے کا سی بی ڈی پنجاب پروجیکٹ سائٹ کے منصوبے کی ترقیاتی پیش رفت کا جائزہ
لاہور( نمائندہ سدید) پنجاب سنٹرل بزنس ڈسٹرکٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی (پی سی بی ڈی ڈی اے) کے چیف ایگزیکٹو آفیسر، جناب عمران امین نے زیر تعمیر پارکنگ پلازہ اور کلمہ چوک انڈر پاس ریموڈلنگ منصوبے کی ترقیاتی پیش رفت کا جائزہ لینے کے لئے سی بی ڈی پنجاب پروجیکٹ سائٹ کا دورہ کیا۔ پی سی بی ڈی ڈی اے جسے سنٹرل بزنس ڈسٹرکٹ (سی بی ڈی پنجاب) کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، نے پنجاب کے دل لاہور میں 5.7 ارب سے زائد کی لاگت کے منصوبے شروع کیے ہیں۔ دورے کے دوران پی سی بی ڈی ڈی اے کے ڈائریکٹوریٹ سربراہان اور نیشنل لاجسٹک سیل (این ایل سی) کے افسران بھی موجود تھے۔

ایگزیکٹو ڈائریکٹر ٹیکنیکل پی سی بی ڈی ڈی اے جناب ریاض حسین نے سی ای او کو زیر تعمیر پارکنگ پلازہ اور کلمہ چوک انڈر پاس کی ریموڈلنگ کے حوالے سے ہونے والی ترقیاتی پیش رفت سے آگاہ کیا۔ بریفنگ کے دوران ای ڈی ٹیکنیکل نے بتایا کہ 365 میٹر طو یل سی بی ڈی پنجاب بلیوارڈ کی گائیڈ بیمز کے لیے کھدائی جاری ہے اور اسے جلد مکمل کر لیا جائے گا جبکہ پارکنگ پلازے کی ریٹنگ والز کے لئے کنکریٹ پورنگ بھی جاری ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ علی زیب روڈ پر پانی اور سیورج کی پائپ لائنز اور ٹیلی کام موصلات کے آلات کی منتقلی کے لئے متعلقہ محکموں نے کام کرنا شروع کر دیا ہے۔ پی سی بی ڈی ڈی اے کے ٹیکنیکل ڈائریکٹوریٹ نے اس بات کو یقینی بنایا ہے کہ ا علیٰ معیار کا بلڈنگ میٹرئیل اور ضروری سامان وافر مقدارمیں سائٹ پر دستیاب ہو۔

اس موقع پر پی سی بی ڈی ڈی اے کے سی ای او عمران امین نے تکنیکی عملے اور کنٹریکٹر کو ہدایت دی ہے کہ وہ کام کی رفتار کو تیز کریں اور منصوبوں کی بروقت تکمیل کے لیے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائیں۔ انہوں نے ٹریفک کی بلا تعطل روانی کو یقینی بنانے کے لئے زور دیا ۔ انہوں نے اس بات کو یقینی بنانے کی ہدایت کی کہ سی بی ڈی پنجاب بلیوارڈ کی تعمیر کی وجہ سے کسی شا ہراہ کی بندش کی صورت میں مناسب متبادل راستے فراہم کیا جائیں تاکہ شہریوں کو کسی قسم کی پریشانی کا سامنا نا کرنا پڑے۔ انہوں نے مزیدکہا کہ یہ منصوبے لاہور اور پنجاب کے ترقیاتی منظرنامے کو تبدیل کر نے کے ساتھ ساتھ نئی جدت بھی دینگے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں